×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

حج بیت اللہ ایک اہم عبادت

آذر 25, 1393 0 253

اسلام کے پانچ ارکان میں سے ایک رکن حج ہے جو 9 ہجری میں مسلمانوں پر فرض کیا گیا۔ حج بیت اللہ ہر اس صاحبِ استطاعت مسلمان پر فرض ہے

جو عاقل، بالغ ہو اور حج کیلئے آمد و رفت کے اخراجات برداشت کر سکتا ہو۔ ارشادِ باری تعالیٰ ہے۔
وَلِلّهِ عَلَى النَّاسِ حِجُّ الْبَیْتِ مَنِ اسْتَطَاعَ إِلَیْهِ سَبِیلاً (سورۃ اٰل عمران 3 : 97)
’’اور اللہ کے لئے لوگوں پر اس گھر کا حج فرض ہے جو بھی اس تک پہنچنے کی استطاعت رکھتا ہو اور جو (اس کا) منکر ہو تو بے شک اللہ سب جہانوں سے بے نیاز ہے۔،،
بیت المقدس کے رہنے والے ایک شخص نے امام زین العابدین علیہ السلام سے طواف کعبہ کے دوران کعبہ کی حقیقت اور اس کے طواف کی حکمت کے بارے سوال پوچھنا چاہا تو آپ نے طواف کے بعد حطیم میں میزابِ رحمت کے نیچے اسے اپنے پاس بٹھا کر ارشاد فرمایا :
’’سیدنا حضرت آدم علیہ السلام کی تخلیق سے پہلے نورانی فرشتوں سے کائنات نور آباد تھی جو فرمانبردار اور عبادت گزار مخلوق ہے۔ جن کے بارے میں قرآن حکیم نے فرمایا :
لاَّ یَعْصُونَ اللَّهَ مَا أَمَرَهُمْ وَیَفْعَلُونَ مَا یُوْمَرُونَO (التحریم 66 : 6)
’’وہ اللہ کی نافرمانی نہیں کرتے اور وہی کام انجام دیتے ہیں جس کا انہیں حکم دیا جاتا ہے۔،،
اللہ رب العزت نے جب ملائکہ سے فرمایا :
إِنِّی جَاعِلٌ فِی الْأَرْضِ خَلِیفَةً (البقرۃ 2 : 30)
’’بے شک میں زمین میں اپنا نائب بنانے والا ہوں۔،،
توفرشتے عرض کرنے لگے :
أَتَجْعَلُ فِیهَا مَن یُّفْسِدُ فِیهَا وَیَسْفِكُ الدِّمَاءَ وَنَحْنُ نُسَبِّحُ بِحَمْدِكَ وَنُقَدِّسُ لَكَ (البقرۃ 2 : 30)
’’اے باری تعالیٰ! کیا تو زمین میں کسی ایسے شخص کو (نائب) بنائے گا جو اس میں فساد انگیزی کرے گا اور خون ریزی کرے گا؟ حالانکہ ہم تیری حمد کے ساتھ تسبیح کرتے رہتے ہیں اور (ہمہ وقت) پاکیزگی بیان کرتے ہیں۔،،
یہ بات ان کے منہ سے نکل گئی مگر انہیں فوراً اپنی غلطی کا احساس ہوا اور وہ اپنے رب کو راضی کرنے کے لیے ’’عرشِ علا،، کے گرد طواف کرنے لگے۔ ان کی زبان پر ایک ہی دعا تھی کہ تو پاک ہے ہماری خطا معاف فرما دے۔
معبودِ برحق کو ان کی یہ ادا پسند آئی۔ انہیں اپنی رحمتوں سے نوازتے ہوئے عرش کی سیدھ میں نیچے ساتویں آسمان پر ایک گھر پیدا فرمایا اور فرشتوں کو حکم فرمایا کہ وہ اس کا طواف کریں تو ان کی خطا معاف کر دی جائے گی۔ اس گھر کا نام ’’بیت المعمور،، رکھا گیا یعنی ایسا گھر جو فرشتوں سے ہر وقت بھرا رہتا ہے ۔

Leave a comment

Make sure you enter all the required information, indicated by an asterisk (*). HTML code is not allowed.