×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

کیا شاعر کروڑ پتی نہیں ہو سکتے ؟

خرداد 10, 1393 0 347

ایک شوقیا شاعر نے گزشتہ ہفتہ متحدہ عرب امارات ( یو اے ای ) کے ایک ٹی وی ٹیلنٹ شو میں 10 لاکھ ڈالر سے زیادہ کی رقم جیت لی .

شاعری کے ساتھ ہی وہاں کا نظارہ انتہائی منفرد تھا . ابو ظہبی کے الراہا ساحلی تھیٹر میں روشنی سے جگمگاتا ہوا فرش ، شاندار پس منظر اور منفرد روشنی شو کا منظر کچھ ایسا تھا جس سے پاپ آئیڈل ، ایکس فیکٹر یا امیرکاج گاٹ ٹیلنٹ کے پرستار واقف ہوں گے .
 فروری سے ہی دنیا بھر کے تقریباً سات کروڑ ناظرین نے " ملینس پویٹ " پروگرام دیکھا . اس شو میں روایتی لباس پہنے مرد شریک ( اس سال کسی عورت نے اس میں حصہ نہیں لیا ) اپنی لکھی ہوئی نظمیں سناتے ہیں جو بول چال کی عربی شاعری کی ایک قسم ہے جسے ناباتی کہتے ہیں .اس شو میں موجود ججوں کا ایک پینل اپنا ردعمل دیتا ہے . اس شو میں کبھی - کبھی متحدہ عرب امارات کا شاہی خاندان بھی اپنی موجودگی درج کراتا ہے . اس شو میں حصہ لینے والوں کی تعداد آہستہ - آہستہ کم کی جاتی ہے تاکہ آخری مرحلہ میں کچھ ہی شریک رہ سکیں.
جیسا کہ مشہور شاعر ورڈسورتھ کہتے ہیں کہ جذبات امن والے ماحول میں ہی ابھرتے ہیں ، اس لحاظ سے نظم سے منسلک اس پروگرام کا خاکہ بھلے ہی برعکس لگتا ہو لیکن اس شو کی موٹی رقم ہمیں تھوڑی دیر تک سوچنے کے لئے مجبور کرتی ہے .27 سالہ سیف المنصوری نے گزشتہ ہفتہ اس شو کے چھٹے ایڈیشن میں کامیابی حاصل کی اور انہوں نے پچاس لاکھ یو اے ای درہم یعنی قریب 13 لاکھ ڈالر حاصل کئے .اگر ادبی ایوارڈ کی بات کریں تو اتنی رقم کم ہی ایوارڈ میں دی جاتی ہے اور اس لحاظ سے ادب کا نوبل انعام ہی اس کے تھوڑا قریب ہے جس میں آٹھ لاکھ سویڈش کرونر ( سویڈن کی کرنسی ) یا 12 لاکھ ڈالر بطور انعام رقم دی جاتی ہے

Leave a comment

Make sure you enter all the required information, indicated by an asterisk (*). HTML code is not allowed.