×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

مخطوطات کی اہمیت پر ایوانِ غالب میں دو روزہ سمینار

خرداد 16, 1393 0 570

غالب انسٹی ٹیوٹ اور رامپور رضالائبریری کے زیراہتمام ’’رامپور رضالائبریری اور غالب انسٹی ٹیوٹ میں موجود فارسی اور اُردو کے مخطوطات،

تاریخ، ادب اور ثقافت کا مآخذ‘‘ کے موضوع پر ۱۴اور۱۵جون کوایوانِ غالب میں ایک سمینار کا انعقاد کیا جارہاہے۔ اس سمینار کی صدارت غالب انسٹی ٹیوٹ کے سکریٹری پروفیسر صدیق الرحمن قدوائی کریں گے۔ رامپور رضالائبریری کے ڈائرکٹر پروفیسر سید محمد عزیزالدین حسین کے افتتاحی کلمات سے سمینار کا آغاز ہوگا۔ معروف ماہرِ تعلیم اور نیشنل یونیورسٹی آف ایجوکیشنل پلاننگ اینڈ ایڈمنسٹریشن میں مولاناآزاد چیئرکے پروفیسر سید عرفان حبیب مہمانِ خصوصی کی حیثیت سے موجود رہیں گے۔اور انسٹی ٹیوٹ آف پرشین ریسرچ،علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی ڈائرکٹر اور ممتاز فارسی اسکالر پروفیسر آذر میدُخت صفوی اس موقع پر موضوع کے تعلق سے کلیدی خطبہ پیش کریں گی۔ ۱۴ ؍اور ۱۵جون صبح دس بجے سے شروع ہونے والے اس سمینار میں پروفیسر شریف حسین قاسمی،جناب شاہد ماہلی، پروفیسر عراق رضازیدی، پروفیسر ریحانہ خاتون،،پروفیسر چندرشیکھر،پروفیسر نسیم احمد،پروفیسرحسن عباس، ڈاکٹر اخلاق احمد آہن، جناب شمس بدایونی، ڈاکٹر مشتاق تجاروی، ڈاکٹر کلیم اصغر، ڈاکٹر وسیم بیگم،ڈاکٹر تبسّم صابر، ڈاکٹر  ارشاد ندوی، ڈاکٹر پریتی اگروال، محترمہ ناظمہ بی ،محترمہ ساجدہ شیروانی، جناب سید نوید قیصر شاہ جیسے اہم اردو اور فارسی اسکالرز کو مقالہ خوانی کی دعوت دی گئی ہے۔ رامپور رضالائبریری اپنے نایاب اور اہم مخطوطات کی وجہ سے نہ صرف ہندستان میں بلکہ پوری دنیامیں جانی جاتی ہے یہاں موجود فارسی، اردو، عربی اور کئی اہم زبانوں کے مخطوطات، ہماری علمی اور تہذیبی دنیا میں دستاویز کی حیثیت رکھتے ہیں۔ غالب انسٹی ٹیوٹ میں بھی مخطوطات کااہم ذخیرہ موجود ہے جس پر وقتاً فوقتاً اردو فارسی اور تاریخ کے ماہرین مستفید ہوتے رہتے ہیں۔ امیدہے کہ اپنی نوعیت کے اس اہم سمینار میں محققین،اساتذہ، طلبہ، ریسرچ اسکالرز کے علاوہ بڑی تعداد میں اہلِ علم جمع ہوں گے۔

Leave a comment

Make sure you enter all the required information, indicated by an asterisk (*). HTML code is not allowed.