×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

مشکوک بائولنگ کو جانچنے کا طریقہ غیر موثر اور ناقص قرار

خرداد 17, 1393 0 346

آئی سی سی کی کرکٹ کمیٹی نے مشکوک بائولنگ کو جانچنے کا طریقہ کار غیر موثر اور ناقص قرار دیتے ہوئے اس بات کی وضاحت کر دی

ہے کہ آئی سی سی کارپورٹنگ اور ٹیسٹنگ نظام ایسے بائولرز کی نشاندہی میں ناکام ہے جو مشکوک بائولنگ ایکشن کے باوجود کھیل میں موجود ہیں۔گزشتہ دنوں بنگلور میں ہونے والے آئی سی سی کرکٹ کمیٹی کے دو روزہ اجلاس میں اس اہم پہلو پر بحث کے دوران اس بات کا اعتراف کیا گیا کہ مشکوک بائولنگ کی روک تھام کیلئے جو طریقہ کار فی الوقت استعمال کئے جا رہاہے وہ کافی حد تک غیر موثر اور ناقص ہے کیونکہ بین الاقوامی کرکٹ میں اب بھی مشکوک بائولنگ ایکشن کے مالک کئی بائولرز کسی بھی موثر نشاندہی کے بغیر مسلسل بائولنگ کر رہے ہیں۔کمیٹی کے ارکان کے مطابق امپائرز کو بائیو مکینسٹ کی سہولت فراہم کی جائے تاکہ وہ بھرپور اعتماد کے ساتھ غیر قانونی بائولنگ ایکشن کے مالک بائولرز کی نشاندہی کر سکیں۔آئی سی سی کے ایک پریس ریلیز کے مطابق اب کچھ ایسی تجاویز اور تبدیلیوں پر غور کیا جا رہا ہے کہ امپائرز اور میچ ریفریز ایسے واقعات کی پورے اعتماد کے ساتھ نشاندہی کر سکیں۔اس طریقہ کا ر کو مزید سخت بنانے کیلئے مختلف ممالک میں غیر قانونی بائولنگ کی جانچ کیلئے ٹیسٹنگ سنٹرز کے قیام کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے کیونکہ فی الحال بائولرز کو ٹیسٹنگ کیلئے پرتھ جانا پڑتا ہے۔

Leave a comment

Make sure you enter all the required information, indicated by an asterisk (*). HTML code is not allowed.