×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

دشمن کے لشکر کے ٹھہرنے کی جگہ

بهمن 03, 1392 364

سپاہ مشرکین نے مقام وطاء میں

احد کے نزدیک پڑاؤ ڈالا دشمنوں کے صرف ٹھہر جانے کی بناء پر رسول نے حباب بن منذر کو پوشیدہ طور پر اس بات پر مامور فرمایا کہ وہ دشمن کی قوت کا اندازہ کریں۔ اور ضروری اطلاعات جمع کرکے اس کی رپورٹ دیں۔ رسول خدا نے اس بات کی تاکید کی کہ اپنی رپورٹ دوسروں کے سامنے بیان نہ کرنا مگر یہ کہ دشمن کی تعداد کم ہو تو اس وقت کوئی حرج نہیں ہے۔

حباب دشمن کے سپاہیوں کے قریب پہنچے اور نہایت دقیق نظر سے ان کا جائزہ لیا، پھر واپس آئے اور پیغمبر سے تنہائی میں ملاقات کی اور کہا کہ حضور میں نے ایک بڑا لشکر دیکھا ہے میرا اندازہ ہے کہ کم و بیش تین ہزار افراد ہیں، دو سو گھوڑے ہیں اور زرہ پوش سپاہیوں کے بارے میں میرا تخمینہ ہے کہ سات سو کے قریب ہوں گے، رسول خدا نے پوچھا کہ ت نے عورتوں کو بھی دیکھا؟ انہوں نے کہا کہ ہم نے ایسی عورتیں دیکھی ہیں جن کے پاس گانے بجانے کے سامان بھی ہیں، پیغمبر نے فرمایا کہ ”یہ عورتیں مردوں کو لڑائی پر اکسانا اور مقتولین بدر کو انہیں یاد دلانا چاہتی ہیں اس سلسلے میں تم کسی سے کوئی بات نہ کرنا خدا ہماری مدد کے لیے کافی ہے۔ وہ بہترین حفاظت کرنے والا ہے خدایا ہماری روانگی اور ہمارا حملہ تیری مدد سے ہوگا۔ (مغازی ج۱ ص ۲۰۷،۲۰۸)

Last modified on پنج شنبه, 03 بهمن 1392 10:12
Login to post comments