×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

ایک مالدار عقلمند کی شہادت

بهمن 18, 1392 366

”مخیرق“ ایک یہودی دانشمند

اور مال دار آدمی تھے خرمے کے درخت اور اچھے خاصے مال و متاع کے مالک تھے جب احد کا دن آیا تو انہوں نے یہودیوں سے مخاطب ہو کر کہا کہ ”خدام کی قسم تمہیں خوب ملعوم ہے کہ محمد کی نصرت تم پر واجب ہے۔

یہودیوں نے عذر پیش کیا کہ آج شنبہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمہارے پاس اب دوسرا شنبہ نہیں ہے۔ پھر انہوں نے لباس جنگ زیب تن کیا اپنے جسم پر ہتھیار سجائے اور احد کی طرف روانہ ہونے کے لیے تیار ہوئے نکلنے سے پہلے اپنے رشتہ داروں سے کہا کہ: اگر میں آج قتل کر دیا جاؤں تو میرے سارے مال کا اختیار محمد کو ہے۔ وہ جہاں چاہیں خرچ کریں۔ اس کے بعد وہ احد کی طرف چل پڑے اور مجاہدین راہ خدا سے جا ملے، جہاد کرتے ہوئے شہید ہوگئے۔ رسول خدا نے ان کی وصیت کے مطابق ان کے مال کو اپنی تحویل میں لے لیا اور ابن اسحاق کی تحریر کے مطابق رسول خدا کے بہت سے اوقاف اور مدینہ میں جو امور خیریہ انجام دیئے ہیں وہ انہیں کے اموال سے تھے۔ (تاریخ طبری ج۲ ص ۵۳۱)

Last modified on سه شنبه, 23 ارديبهشت 1393 10:26
Login to post comments