×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

زندہ جاودان معجزہ

مرداد 01, 1393 345

ہمارے پیارے نبی حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم خدا کے سب سے محبوب پیغمبر اور آخری پیغمبر ہیں ۔ انہیں بھی خدا تعالی کی

ذات نے بہت سے معجزے عطا فرمائے ۔ واقعہ معراج ایک معجزہ ہے کیوں کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ایک ہی رات میں مکہ سے مسجد اقصیٰ اور پھر وہاں سے ساتوں آسمان، یہاں تک کہ سدرۃ المنتہیٰ کہ جہاں جانے سے فرشتوں کے بھی پر جلتے ہیں، وہاں تک پہنچ جانا، جنت اور دوزخ کی سیر کرنا اور اسکے بعد دوبارہ زمین پر آنا اور وہ بھی اتنے مختصر وقت میں کہ دروازے کی کنڈی ابھی تک ہل رہی تھی اور آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا بستر بھی گرم تھا۔ اسی طرح انگلی کے اشارے سے چاند کو دو ٹکڑے کرنا اور پھر جوڑ دینا، دودھ کے ایک پیالے سے صحابہ کرام رضوان اللہ اجمعین کا سیر ہو کر پینا، ہجرت کے وقت مشرکین کے سامنے سے نکلنا لیکن ان کو آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نظر نہ آئے۔
یہ معجزات انبیاء کرام کی وفات کے ساتھ ہی ختم ہوگئے اور ان کا ذکر ہمیں صرف آسمانی صحائف یا تاریخی کتابوں میں ہی ملتا ہے لیکن اللہ تعالیٰ نے اپنے آخری رسول حضر ت محمدصلی اللہ علیہ وسلم کو قرآن مجید کی صورت میں جو معجزہ عطا کیا تھا وہ 1400 سال سے زائد کا عرصہ گزرجانے کے بعد بھی نہ صرف اپنی اصلی حالت میں موجود ہے بلکہ آج کے جدید سائنسی دور میں بھی اپنا لوہا منوا رہا ہے۔ قرآن پاک دنیا میں سب سے زیادہ پڑھی جانی والی کتاب ہے جو کہ ایک معجزہ ہے۔ قرآن پاک دنیا کی واحد کتاب ہے جو بیک وقت کروڑوں لوگوں کو مکمل طور پر حفظ ہے، یہ بجائے خود ایک معجزہ ہے۔ پھر جیسا کہ قرآن پاک میں ہی اللہ تعالیٰ نے فرمایا کہ یہ قرآن پاک قیامت تک محفوظ رہے گی تو ساڑھے چودہ سو سال کے بعد بھی قرآن پاک کے ایک زیر زبر پیش میں کوئی فرق نہیں آیا ہے۔ یہ بھی ایک معجزہ ہے۔ اس کے علاوہ یہ قرآن پاک کا اعجاز ہے کہ غیر مسلم جب اس کلام کو سنتے تھے تو ان کے دل کی دنیا بدل جاتی تھی اور وہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پر ایمان لے آتے تھے۔اسی لئے بعد میں مشرکین مکہ اور قریش کے سرداروں نے یہ فیصلہ کیا کہ کسی کو قرآن سننے نہ دیا جائے اسی لئے حج کے زمانے میں، میلوں میں اور مختلف تجارتی قافلوں کی آمد پر مشرکین کے نمائندے جا کر ان سے کہتے تھے کہ دیکھو جب تم شہر میں آنا تو محمد (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم  ) کی باتوں میں نا آنا، وہ جادوگر ہیں (نعوذ باللہ ) ان کے پاس ایک ایسا کلام ہے جو اس کو سنتا ہے تو پھر اپنے دین سے پھر جاتا ہے۔

Login to post comments