×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

کتاب الکافی کا مختصر تعارف

مرداد 03, 1393 849

الکافی معتبر ترین شیعہ کتاب حدیث اور ثقة الاسلام أبى جعفر محمد بن یعقوب بن اسحاق الكلینی الرازی (البغدادی ـ المتوفّىٰ سنة 328 یا

329 ہجری) کی تالیف ہے۔
تاج العروس میں الکافی کے مؤلف کے بارے میں مذکور ہے:
"ابوجعفر محمد بن یعقوب الکلینی، عباسی بادشاہ المقتدر باللہ کے زمانے کے بزرگ شیعہ فقیہ و عالم دین تھے اور چونکہ وہ بغداد کے "درب السلسلہ" میں آبسے تھے اسی وجہ سے انہیں "سلسلی" کا لقب ملا ہے۔ اور وہ سنہ 327 ہجری میں درب السلسلہ میں اور "صور" میں (2) نقل حدیث کیا کرتے تھے۔
شیخ طوسی لکھتے ہیں:
شیخ کلینی علم حدیث کے قابل اعتماد ترین اور استوار ترین عالم تھے جنہوں نے الکافی کو 20 سال کے عرصے میں تصنیف کیا اور سنہ 328 ہجری کو دنیا سے رخصت ہوئے۔
النجاشى لکھتے ہیں:  
شیخ کلینی سنہ 329 ہجری ـ ستاروں کے منتشر ہونے کے سال ـ (3) وفات پاگئے اور ابوقیراط محمد بن جعفر حسینی نے ان نماز جنازہ پڑھائی اور باب الکوفہ کے ایک مقبرے میں سپرد خاک کئے گئے۔
شیخ آقا بزرگ طہرانی نے نے اپنی کتاب الذریعہ الی تصانیف الشیعہ کی جلد 17 صفحہ 245 میں الکافی کے بارے میں لکھا ہے:
یہ کتاب چار کتابوں میں اہم کتاب ہے جو قابل اعتماد اصولوں پر استوار ہے اور رسول خدا (ص) اور ائمۂ معصومین (ع) کی احادیث نقل کرنے کے سلسلے میں ایسی کتاب ابھی تالیف نہیں ہوئی ہے۔ یہ کتاب امام زمانہ (علیہ السلام) کی غیبت صغری کے زمانے میں تین حصوں (اصول الکافی، فروع الکافی اور روضۃ الکافی)، 34 رسالوں اور 320 ابواب میں مرتب کی گئی ہے۔
چنانچہ الکافی مجموعی طور پر 16121 حدیثوں کا مجموعہ ہے۔
حوالہ جات:
1۔ كتاب‏الاستبصار‏۔ شیخ طوسى،ج 2،ص 352۔
2۔ لسان المیزان، ج 5،ص 433 ـ تاریخ الكامل ـ ابن اثیر ـ حوادث سال 228 ہجری۔
3۔ ظاہرا اس سال کو کہا جاتا جس میں فضائی واقعات رونما ہوئے ہوں اور شہابوں کی بارش ہوئی ہے۔

Login to post comments