×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

نماز مسجد جمکران کی سند!

مرداد 10, 1393 390

امام زمانہ (عج) نے حسن بن مثلہ جمکرانی (رح) سے فرمایا: لوگوں سے کہہ دو کہ اس مقام پر حاضری دیں اور اس کو عزیز رکھیں اور اس میں

چار رکعت نماز بجا لائیں۔
پہلی نماز "تحیتِ مسجد" کی نیت سے بجا لائیں اور ہر رکعت میں ایک مرتبہ سورہ حمد اور سات مرتبہ سورہ اخلاص (قل هو الله احد...) پڑھیں اور رکوع میں سات مرتبہ "سبحان ربی العظیم وبحمدہ" اور سجدوں میں سات مرتبہ "سبحان ربی الاعلی وبحمدہ" پڑھیں۔ دوسری نماز "نماز امام زمانہ (عج)" کی نیت سے بجا لائیں۔ اس نماز کی ہر رکعت میں سورہ حمد کی تلاوت کے دوران سو مرتبہ "ایاک نعبد وایاک نستعین" پڑھیں اور رکوع و سجود کا ذکر سات مرتبہ دہرائیں۔
اور جب نماز مکمل ہوجائے تو سلام دیں اور اس کے بعد ایک مرتبہ "لا اِلهَ اِلّا اللهُ" پڑھیں اور اس کے بعد تسبیحات حضرت زہراء (س) (یعنی 34 مرتبہ اللہ اکبر، 33 مرتبہ الحمد للہ اور 33 مرتبہ سبحان اللہ) پڑھیں (1) اور اس کے بعد سجدہ کریں اور سجد میں 100 مرتبہ پڑھیں: "اللهم صلِّ علی محمدٍ و آلِ محمدٍ"۔
اس کے بعد حضرت ولی عصر (عَجَّلَ اللهُ تَعالی فَرَجَهُ الشَّریف) نے فرمایا: جو بھی یہ دو دو رکعتی نماز بجا لائے اس شخص کی مانند ہے جس نے کعبہ معظمہ میں دو رکعت نماز ادا کی ہو"۔ (2)
حوالہ جات:
1۔ تسبیح حضرت زہراء (سلام اللہ علیہا) پر اسرار اور آثار و فضائل مترتب ہیں جن کے بارے میں مزید آگہی کے لئے متعلقہ ثواب الاعمال شیخ صدوق اور ادعیہ کی کتب سے رجوع کریں۔
2. الزام الناصب، شیخ‌علی یزدی حائری، ج2، ص59.
منبع : پورتال جامع مهدویت
ترجمہ فرحت حسین مہدوی

Login to post comments