Print this page

آج کا لطیفہ

مرداد 22, 1393 332
Rate this item
(0 votes)

ایک پیر کی نا شکری بیوی جس پیر کے کرامات پورے گاؤں والے مانتے تھے علاوہ اس کی بیوی کے۔ایک دن وہ اپنے استاد کے پاس گیا اور

کہا مجھے ایسی کوئی معجزاتی کرامت عطا کیجئے کہ میری بیوی مجھ سے متاثر ہو جائے۔ پیر صاحب نے اپنے شاگرد کی عاجزی دیکھ کر کہا جا تجھے ہوا میں اڑنے کا معجزہ عطا کرتا ہوں۔ پیر اڑتے اڑتے اپنے گاؤں پہنچ گیا اور گاؤں کے چکر لگانے شروع کردیئے۔ پورا گاؤں اور اس کی بیوی اس کی اْڑان سے بڑے متاثر ہوئے۔رات کو جب پیر واپس اپنے گھر لوٹا تو اس کی بیوی نے کہا کہ اِک تم پیر بنے پھرتے ہو آج ہمارے گاؤں کے اوپر ایک پیر صاحب سارے گاؤں کے چکر لگاتے رہے۔سارا گاؤں بڑے شوق سے ان کو دیکھتا رہا۔پیر بولا وہ پیر میں ہی تو تھا تو وہ بولی او ہو۔ تو وہ تم تھے جب ہی تو کہوں اْلٹے اْلٹے کیوں اْڑ رہے تھے۔

Login to post comments