×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

آج کا لطیفہ

آذر 26, 1393 198

ایک دفعہ کسی مسلمان ،ہندواور سکھکو سزائے موت سنائی گئی، تینوں کوں تختہ دار پر لے جا یا گیا ۔سب سے پہلے سے اسکی آخری خواہش

پوچھی گئی۔اس نے کہا کہ وہ دو رکعت نفل ادا کرنا چاہتا ہے۔لہذا اس کی خواہش پوری کرنے کے بعد اسے تختہ دار پر چڑھایا گیا۔مگر تختہ خراب  ہوگیا ۔لہذا اس کی جان خلاصی ہو گئی ۔اس کے بعد ہندو سے اس کی آخری خواہش پوچھ کر پوری کی گئی اور اسے تختہ دار پر چڑھادیا گیا مگر اب تختے نے اس کی جان  بچانے میں اہم کردار ادا کیا۔اب سکھ سے بھی اس کی آخری خواہش پوچھی گئی۔سردار جی نے جھنجھلا کر کہا،خواہش کو گولی مارو، پہلے تختہ ٹھیک کراؤ۔‘‘

Login to post comments