×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

موسم سرما میں مقوی غذا خوب کھائیں،صحت بنائیں

آبان 24, 1393 539

ہر موسم کی اپنی اہمیت ہوتی ہے۔ اپنی اہمیت کی وجہ سے وقت آنے پر اس کا انتظار رہتا ہے ۔ خاص طور پر گرمی اور سردی کے موسم

کی کیونکہ ان کی مدت دیگر موسموںسے زیادہ لمبی ہوتی ہے۔موسم گرما غریبوں کے لئے اور سر د موسم امیروں کے لئے مانا جاتا ہے کیونکہ موسم گرما میں کھانا پینا اور رہن سہن سادہ ہوتا ہے جو عام طور پر ہر طبقے کے لئے برداشت ہوتا ہے۔ سرد موسم میں بالکل ا سکے برعکس ہوتا ہے۔ رہن سہن اور کھانا پینا مہنگا ہوتا ہے۔
سرد موسم میںسونے کے لئے گرم بستر ، گرم کپڑے اور کھانے کے لئے مقوی خوراک چاہئے، بھوک زیادہ لگتی ہے اور ہاضمے کانظام تیز ہو جاتا ہے جو بھی کھالو ہضم ہو جاتا ہے۔ سردموسم کو ایک اچھا اور سمجھدار تاجر سمجھا جاتا ہے۔ جیسے تاجر موسم میں اچھا کما کر کچھ رقم برے وقت کےلئے رکھ لیتا ہے اسی طرح ٹھنڈ میں مناسب ورزش اور غذا سے جسم کو صحتمند بنا لینا چاہئے۔ ٹھنڈ میں دن چھوٹے اور راتیں لمبی ہوتی ہیں جس سے آپ کے جسم کو کام کے مطابق آرام کرنے کا بھی کافی وقت مل جاتا ہے۔ جسم کو مکمل آرام ملنے سے جسم میں طاقت جمع ہو جاتی ہے جس کا استعمال اگلے دن کیا جا سکتا ہے۔
سرد موسم میں صبح ورزش کرنے کا یا سیر پر جانے کا اپنا مزہ ہوتا ہے۔ اس موسم میں جسم کی توانائی کا صحیح استعمال کر سکتے ہیں جو بھی کھایا پیا ہے اسے ورزش کرکے اپنے ہاضمے کے نظام کوٹھیک رکھ سکتے ہیں۔ ورزش اور سیر جسم کو مضبوط بناتے ہیں۔ سرد موسم کے بعد ورزش اور سیر کو چھوڑ نہیں دینا چاہئے۔ اسے تھوڑا کم کر سکتے ہیں۔ اس موسم میں متناسب اور مقوی غذاءکا استعمال مناسب مقدار میں کریں۔ خود کو زیادہ وقت تک بھوکا نہ رکھیں۔ اس دور میں کھانے میں برتی گئی غفلت سے جسم کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔ جسم کمزور اور ڈھیلا پر جاتا ہے۔ سردیوں میں ہری سبزیاں مناسب مقدار میں ملتی ہیں جنہیں کچی اور پکا کر خوب کھائیں۔ اس دور میں گھی، دودھ، مکھن، ربڑی، ملائی وغیرہ کا استعمال آسانی سے کیا جا سکتا ہے۔ کھانے کے بعد تھوڑا گڑکھانا سردموسم میں بہتر ہے۔ نہانے کے بعد شہد لینا چاہئے۔ جوسردی سے بچا کر رکھنے میں معاون ہوگا۔ ادرک ، لہسن ، آنولہ بھی لینا چاہئے۔موسم سرما میں جسم کو سردی نہ لگے، اس بات کا بھی خیال رکھنا چاہئے۔ باہر نکلتے وقت مناسب گرم کپڑے پہنیں۔ گرم پانی سے نہاکر ایک دم باہر کی طرف نہ بھاگیں۔ دیر رات تک باہر نہ رہیں۔ ان دنوں زیادہ ٹھنڈا پانی نہ پئیں کیونکہ ٹھنڈے پانی سے گلا جلد ی خراب ہو جاتا ہے۔ گنگنے پانی کا استعمال اس موسم میں فائدہ مند ہے جو جسم کو کئی بیماریوں سے دور رکھتا ہے۔ ٹھنڈ کی وجہ سے بار بار چائے پینے کو دل کرتا ہے لیکن چائے کا استعمال زیادہ نہ کریں کیونکہ اس سے زیادہ یورن کی شکایت ہوتی ہے جس سے رات کو نیند میں خلل پڑتا ہے۔
سردیوں میں جہاں تک ممکن ہو دن میں کھانا کھانے کے بعد سوئیں نہیں۔ سردیوں کے موسم میں وقت ملنے پر تھوڑی دھوپ ضرور سینکیں جو جسم کے لئے بہت فائدہ مند ہوتی ہے۔ اس موسم میں جسم کی مساج کرنا بہتر ہے جس سے جسم میں بلڈسرکولیشن ٹھیک رہتا ہے۔ ضروری ہونے پر ہی سفر پر جائیں سفر پر جاتے وقت گرم لباس کا خاص خیال رکھیں۔ سردیوں میں جلد خشک ہونے پر موئشچرائز کریم کا استعمال کریں۔
اس موسم میں خشک میوے جات کا استعمال نہایت ہی مفید ہے اسلئے خو د بھی کھائیں اور بچوں کو بھی کھلائیں۔اپنے کھانے میں سبزیوں اورپھلوں کا استعمال زیادہ سے زیادہ کریں۔کھانا کھانے کے فوراً بعد سوئیں نہیں بلکہ چہل قدمی کو اپنی روزمرہ کی زندگی کا حصہ بنالیں۔

Login to post comments