×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

مصنوعي جلد کي تياري ميں مثبت پيش رفت

مهر 29, 1392 466

جرمني ميں سائنسدانوں نے ايک ايسي مشين کي تياري ميں کاميابي حاصل کي ہے جو مصنوعي جلد کي پروڈکشن ميں معاون ثابت ہو گي-

اس مشين سے مصنوعي جلد تيار کرنے کي اجازت صحت سے متعلق اعليٰ يورپي ادارے نے دے دي ہے-

جرمن شہر اشٹٹ گارٹ ميں قائم فراۆن ہوفر انسٹيٹيوٹ فار مينو فيکچرنگ انجينئرنگ اينڈ  آٹو ميشن نے ايک ايسي مشين تشکيل دي ہے جو مصنوعي جلد کي تياري ميں معاون ثابت ہو گي- نئي مشين سے جلد کے خليوں(Cells)  پر مشتمل رابطہ کار ريشوں يا ٹِشوز (Tissues) کي  تياري  کے علاوہ جِلد کي رنگت کي وجہ بننے والے خليوں (Pigment cells) کي تياري ميں بھي کاميابي حاصل ہوئي ہے-

 مصنوعي جلد تيار کرنے والي مشين خاصي بڑي ہے- اس کي لمبائي سات ميٹر اور چوڑائي تين ميٹر ہے- مشين کي اونچائي بھي تين ميٹر کے قريب ہے- مشين کے اندر مختلف امور کي تکميل کے ليے روبوٹ کے بازو نصب ہيں-  انسانوں کے ليے اليکٹرانک اور ڈيجيٹل آلات کي منظوري دينے والے يورپي ادارے نے مصنوعي جلد تيار کرنے کي منظوري دے دي ہے- اب آزمائشي دور ميں جانور کي جلد کي تياري کا عمل شروع کر ديا گيا ہے-جلدي سرطان انتہائي خطرناک تصور کيا جاتا ہے جلدي سرطان انتہائي خطرناک تصور کيا جاتا ہے

 اس وقت نوزائيدہ لڑکوں کے ختنوں سے حاصل ہونے والي جلد سے انساني جلد کے خليوں کي آزمائشي تياري کا سلسلہ بھي جاري ہے- اشٹٹ گارٹ ميں قائم اس  ادارے کے ريسرچ انجينئر  آندرياس ٹراۆبے (Andreas Traube) کا کہنا ہے کہ  مشين سے حاصل ہونے والے سابقہ نمونے کم کارگزار تھے- ٹراۆبے کے مطابق مصنوعي جلد کي پروڈکشن ميں سردست اسٹيم سيل کا استعمال کيا جا رہا ہے- ٹراۆ بے نے يہ بھي واضح کيا  کہ مصنوعي جلد کے ليے سيلز يا خليوں کي تياري ايک Source  يا ذريعے سے کي جا رہي ہے اور اس باعث خليوں ميں ہم آہنگي کا فقدان نہيں ہے- ريسرچ ادارے ميں مصنوعي جلد کے نمونے کے ليے 3 سے 10 ملين سيلز تک کا حصول ممکن ہے- کم سے کم اصلي سيلز کو حاصل کرنے کے بعد ان کے ليے مصنوعي حرارت (Incubation) سے ايسے موافق حالات پيدا کيے جاتے ہيں جو افزائش کے ليے حوصلہ افزاء ہوتے ہيں- اس طرح اصل جيسے خليوں کي تشکيل کا عمل کاميابي سے مکمل کيا جاتا ہے-

 ان حاصل شدہ سيلز کو ايک  ايک سينٹي ميٹر قطر کي ٹيسٹ ٹيوب ميں پہلے سے رکھي  گئي کوليگن پر رکھ ديا جاتا ہے- کوليگن وہ پروٹين ہوتي ہے جو جانوروں کے پٹھوں سے حاصل کي جاتي ہے اور اس کو مزيد گرم کريں تو جيلاٹين حاصل ہوتي ہے-  يہ خليے کوليگن کي سطح پر تقريباً 6  ہفتے رہنے کے بعد افزائش پاتے ہيں- جانوروں کي پروٹين اور خليوں کے درميان مسلسل ربط و اتصال افزائش کا سبب بنتا ہے- اس باعث ايک 5 ملي ميٹر جتني موٹي  جلد تيار ہو جاتي ہے- اس جلد کا اصلي جلد کے ساتھ تقابلي ٹيسٹ کيا جاتا ہے-

 ريسرچ انجينئر آندرياس ٹراۆبے کے مطابق جلد تيار کرنے والي مشين اندر سے ہمہ وقت جراثيم سے پاک رکھي جاتي ہے- اس کے اندر موجود انکيوبيشن چيمبرز کا درجہ حرارت 37 ڈگري سينٹي گريڈ رکھا جاتا ہے- اس چيمبر ميں ايک وقت ميں 500 چھوٹے چھوٹے ٹرے رکھے جا سکتے ہيں جبکہ ہر ٹرے ميں 24 ٹيسٹ ٹيوبز رکھنے کي گنجائش ہوتي ہے- ٹراۆبے کے مطابق اگلے آٹھ ماہ کے دوران مصنوعي جلد کي تياري کي حتمي منظوري حاصل ہونے کے بعد کمرشل بنيادوں پر پروڈکشن کا آغاز کيا جا سکے گا-جلدي سرطان ميں مبتلا ايک مريضجلدي سرطان ميں مبتلا ايک مريض

 بعض دوا ساز اور طبي محققين کا خيال ہے کہ ابھي تک جلد تيار کرنے کا سلسلہ بہت ہي محدود ہے- جتني جلدي اس کا کمرشل يا بڑے پيمانے پر سلسلہ شروع نہيں کيا جاتا تب تک اصل جلد اور مصنوعي جلد کے اندروني متحرک خليوں پر بامعني تحقيق کا عمل مکمل نہيں کيا جا سکے گا- محققين کے خيال ميں مصنوعي جلد، جلدي  سرطان کے علاوہ  Pigment cells کي خرابي کے ساتھ ساتھ  الرجي اور پھپھوندي کے باعث خراب ہونے والي جلد کے متبادل کے طور پر استعمال کي جا سکے گي-

 فراۆن ہوفر سوسائٹي جرمني کے بلند پايہ سائنسي تحقيقي اداروں ميں سے ايک ہے- سارے جرمني ميں اس کي ساٹھ کے قريب مختلف ادارے ہيں اور ان ميں اٹھارہ سو سائنسدان ريسرچ پروجيکٹس ميں مصروف ہيں- يہ سوسائٹي اطلاقي تحقيق يا اپلائيڈ ريسرچ کو فوقيت ديتي ہے- اس ادارے کي بنياد جرمن سائنس دان اور انجينئر يوزف فان فراۆن ہوفر نے سن 1949 ميں رکھي تھي- اس وقت اس کے سات مراکز امريکہ اور تين ايشيا  ميں کام کر رہے ہيں- کئي تکنيکي  اختراعات اور  سائنسي ايجادات اس سوسائٹي کي مرہون منت ہيں-

Last modified on شنبه, 03 خرداد 1393 09:45
Login to post comments