×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

اسٹامينوفين کے متعلق کچھ آگاہي ( حصّہ دوّم )

مهر 29, 1392 484

کسي بھي دوائي کو ايک حد ميں رہ کر استعمال کيا جانا چاہيۓ اور ضروري ہوتا ہے کہ ڈاکٹر کا فارماسسٹ کي ہدايت کے مطابق دوائي کا استعمال کريں -

اگر خدانخواستہ دوائي کي مقدار حد سے زيادہ استعمال ہو جاۓ تو فوري طور پر اس سلسلے ميں اقدامات کريں اور اپنے قريبي ڈاکٹر يا دواساز سے رابطہ کريں -

مندرجہ ذيل جزوي اثرات عام  ھيں ليکن کسي سنجيدہ مسئلے کي نشاندھي کرتے ھيں،اگر ان ميں سے کسي ايک کے اثرات ظاھرھوں تو اپنے بچے کو فورن اسکے ڈاکٹر يا ايمرجنسي ميں لے کر جائيے -

 ڈ ائريا

 پيٹ کا درد يا مڑوڑ

 بھوک کا خاتما

 جلدي دانے،داہئرے ،خارش

 چہرا،ھونٹ،زبان،يا گلے کي سوجن

 پسينے کي زيادتي

 آنکھوں يا جلد کا پيلا ھونا

 استامنوفين کي دوا ديتے وقت کونسي حفاضتي تدابير اختيار کرني ضروري ھيں؟

 اگر آپ بچے کو درد کے لئےاستامنوفين ديتے ہيں تو اس صورت ميں اپنے ڈاکٹر کو کال کريں اگر درد بڑھ جاتا ھے، نيا درد ھوتا ھے يا درد والا حصہ سرخ يا سوج جاتا ھے کوئي اور دوا دينے سے پہلے خواہ وہ نسخے کي ھو يا بغير نسخے کي، يا پھردوسري ادويات، جيسے ھربل، يا قدرتي دوائيں، اپنے ڈاکٹر يا فارماسسٹ سے رجوع کريں -

 کچھ اور دوائيں بھي ھو سکتا ھے استامنوفين کے اجزاء رکھتي ھوں ،ہميشہ اجزاء کو چيک کريں يا فارماسسٹ سے رجوع کريں تاکہ آپ بچے کواستامنوفين کي زيادتي سے بچا سکيں -

 آپ کي جانکاري کےلئے ضروري نکات

 وہ تمام دواہياں جو آپ کا بچہ لے رھا ھے،ان کي لسٹ ڈاکٹر يا فارماسسٹ کو دکھايئں -

 کئي اقسام کي استامنوفين دستياب ھيں ،اپنے بچے کي عمر اور وزن کي تسلي کرکے دوا ديں اگر آپ پر يقين نہيں ھيں تو بچے کے ڈاکٹر يا فارماسسٹ سےرجوع کريں -

 نہ تو اپنے بچے کي دوا کسي سے شئر کريں اور نہ کسي کي دوا  اسے ديں-

 استامنوفين کو کمرے کے درجہ حرارت ،ٹھنڈي،خشک جگہ پر رکھيں ،سورج کي روشني سے دور رکھيں،کچن يا غسل خانے ميں نہ رکھيں -

Last modified on پنج شنبه, 01 خرداد 1393 12:24
Login to post comments