×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

ریل کے سفر میں آچکاہے انقلاب

ارديبهشت 16, 1393 1085

16اپریل1853 کو بمبئی سے تھانہ کے درمیان شروع ہونے والی انڈین ریلوے کا سفر2صدیوں پر محیط ہے۔آج انڈین ریلوے کا شمار

دنیا کی مصروف ترین اور عظیم ریل نیٹ ورک میں ہوتا ہے جبکہ تقریباً 5000کروڑ مسافرنہ صرف اس کے ذریعہ سے سفر کرتے ہیں بلکہ 650 ارب ٹن سامان کا نقل و حمل بھی ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ16 لاکھ ملازمین اپنی خدمات پیش کرتے ہیں۔پٹری کا آغاز1835میں جبکہ21دسمبر1853سے یکم اپریل2014 تک کا طویل زمانہ گذرچکا ہے۔انڈین ریلوے نے مسافروں کی سہولت کیلئے حال ہی میں ایس ایم ایس الرٹ کی سہولت شروع کی ہے جبکہ ناردرن ریلوے کے سی پی آراو کے مطابق یکم اپریل سے کچھ نئے قوانین بھی نافذہوئے ہیںجس سے ریل کا سفرمزید پرلطف ثابت ہو سکتا ہے۔


یکم اپریل‘منگل یعنی تبدیلی کا دن:
سٹنگ اپگریڈیشن:
جس طرح فی الحال برتھ والی کلاس میں اپگریڈیشن کی فری سہولت مسافروں کو مل رہی ہے ، وہی سہولت سٹنگ کلاس میں بھی شروع کی جائے گی۔ ریلوے کا دعوی ہے کہ یکم اپریل 2014 سے سیکنڈ سٹنگ 2S کے ٹکٹ رکھنے والوں کوگنجائش میسر ہونے کی صورت میں چیر کار CC میں اپ گریڈ کر دیا جائے۔ اسی طرح چیئر کار کے مسافر اپ گریڈ ہو کر ایگزیکٹو کلاس میں جا سکیں گے۔
ویٹنگ لسٹ:
 اس کے تحت ٹرین کا چارٹ تیار ہونے تک اس ٹرین میںمتعینہ کوٹہ کی جتنی بھی نشستیں خالی رہ جائیں گی ، ان سے جنرل ویٹنگ لسٹ پہلے کلیئر کی جائے گی۔ اس کے بعد بھی نشستیں بچ جاتی ہیں تو تتکال کی سیٹیں کلیئر کی جائیں گی۔
SMS الرٹ:
یہ اسکیم حال ہی میں شروع کی گئی ہے۔ اس کے تحت ٹکٹ ریزرویشن کے بعد اسٹیٹس تبدیل کرنے پر یعنی ویٹنگ سے آراے سی ،آراے سی سے کنفرم ، ویٹنگ سے کنفرم یا اپگریڈیشن جیسی تمام معلومات کو موبائل فون پر میسر کروایا جائے گا۔ اس کیلئے آپ کو کہیں کال کرنے یا کاو ¿نٹر پر جانے کی ضرورت نہیں ہے۔ ٹرین کا ریزرویشن چارٹ بننے کے بعد برتھ نمبر ، بوگی نمبر یاآراے سی نمبر ایس ایم ایس کے ذریعہ مل جائے گا۔ اتنا ہی نہیں ، اگر آپ کی سیٹ میں کوئی تبدیلی ہوئی ہے جیسے اپگریڈیشن وغیرہ تو اس کی اطلاع بھی ایس ایم ایس کے ذریعے مل جائے گی۔ اے سی فرسٹ کلاس کی سیٹوں کی اطلاع فہرست بنتے ہی ایس ایم ایس سے مل جائے گی۔
ریل کی ہم سفر سائٹ
indianrail.gov.in
کیا ہے خاص؟
- یہ ریلوے کی ایک ایسی سائٹ ہے ، جو دوسری سائٹوں سے بھی رابطہ قائم کر دیتی ہے۔
- یہاں پی این آر اسٹیٹس چیک کرنے کیساتھ ہی جس ٹرین میں ریزرویشن کروانا چاہتے ہیں ، اس میں سیٹوں کی دستیابی بھی دیکھ سکتے ہیں۔
- اگر آپ ریلوے کے قوانین کو جاننا چاہتے ہیں تو وہ بھی یہاں دستیاب ہیں۔
کس طرح کریںاستعمال؟
- آپ جیسے ہی یہ پیج کھولیں گے لیفٹ سائیڈ میں کئی لنک ملیں گے۔
- اس کے لیفٹ میں Information سیکشن میں rules ملیں گے۔ اس پر کلک کرکے آپ ریزرویشن اور رقوم کی واپسی سمیت دیگر ضوابط کی معلومات حاصل کرسکتے ہیں۔
- یہیں پر Current Booking Availabilityکی سہولت بھی میسر ہے ، جہاں کلک کرکے آپ ملک بھر میں کسی بھی اسٹیشن پر کرنٹ کوٹے کے تحت خالی نشستوں کا اسٹیٹس حاصل کر سکتے ہیں۔ چارٹ بن جانے کے بعد خالی بچی ہوئی سیٹوں کو کرنٹ کوٹہ کہتے ہیں۔
- اس کے ٹاپ لیفٹ میں Services کا سیکشن ہے جس میں National Train Enquiry Systemکا لنک ملے گا۔ یہاں سے آپ کو کسی بھی ٹرین کا رننگ اسٹیٹس جان سکتے ہیں۔ ٹاپ رائٹ سائیڈ پر Internet Reservation پر کلک کرکے آپ آن لائن ریزرویشن کی ویب سائٹ پر جا سکتے ہیں۔ یہاں پی این آر اسٹیٹس چیک کرنے کی سہولت بھی میسر ہے۔
- اس لنک پر کلک کرنے کے بعد جو پیج کھل جائے گا ، اس میں Source Stationملے گا۔ اس میں آپ اپنے اسٹیشن کا نام ڈال کر Get Availability پر کلک کر دیں۔ اگر اس وقت تک چارٹ بننے کے بعد اس اسٹیشن پر کسی ٹرین میں سیٹیں ریزرو ہونے سے باقی رہ گئی ہیں تو ان کا اسٹیٹس مل جائے گا۔
- کرنٹ ریزرویشن ان سیٹوں کا ہوتا ہے ، جو چارٹ بننے کے بعد بھی خالی رہ جاتی ہیں۔ ان کا ریزرویشن کرنٹ کاو ¿نٹر سے ہوتا ہے اور انہیں آن لائن بک نہیں کیا جا سکتا۔ یہ کاو ¿نٹر 24 گھنٹے کھلا رہتا ہے۔ یہاں ہر اس ٹرین کا کرنٹ ٹکٹ ملتا ہے جس کا چارٹ بن چکا ہے یعنی عموما ٹرین روانہ ہونے سے 4 گھنٹے پہلے جبکہ ٹرین روانہ ہونے تک ٹکٹ خریدے جا سکتے ہیں۔
تتکال اور کرنٹ کا فرق:
تتکال اور کرنٹ میں فرق یہ ہے کہ تتکال ٹکٹوں کیلئے ایڈیشنل چارج ا داکرنا پڑتا ہے جبکہ کرنٹ سیٹوں کا ریزرویشن ’نارمل فیر‘ پر ہی ہوتا ہے۔
کیا ہے خاص irctc.co.in
- اگر آپ آن لائن ٹکٹ بک کرانا چاہتے ہیں تو اس سائٹ پر جائیں گے۔
- یہاں لاگ ان کرئیٹ کرنے کے بعد آپ آن لائن ٹکٹ ریزرو کروا سکتے ہیں۔ یہاں آپ کو کریڈٹ کارڈ ، ڈیبٹ کارڈ یا نیٹ بینکنگ سے ادائیگی کر سکتے ہیں۔
- اگر آپ نہیں چاہتے کہ نیٹ بینکنگ یا کسی کارڈ سے ادائیگی کریں تو آپ آئی آر سی ٹی سی کی ewallet اسکیم میں رجسٹریشن کروا سکتے ہیں۔
- آن لائن بک کروائے گئے ٹکٹ آن لائن ہی کینسل ہو سکتے ہیں۔ یہاں سے آپ کرنٹ کے علاوہ تمام قسم کے ٹکٹ بک کروا سکتے ہیں۔حتی کہ رعایتی ٹکٹ بھی بک کروائے جا سکتے ہیں۔
کیا ہے eWallet؟
 ریلوے میںeWallet آپ کا وہ آن لائن اکاو ¿نٹ ہے جس میں زیادہ سے زیادہ 10 ہزار روپے رکھے جا سکتے ہیں۔اس کا فائدہ یہ ہوگا کہ جب آپ ٹکٹ بک کرواتے ہیں تو ادائیگی کیلئے کسی بینکنگ گیٹ وے کا استعمال کرنے کی ضرورت نہیں ہو گی اور اس سے آپ کا وقت بھی بچے گا۔ اس میں رجسٹریشن کروانے کیلئے آپ کو irctc.co.inپر لاگ ان کرنا ہوگا۔ جہاں ٹی ڈی آر اور رقوم کی واپسی کے لنک میسر ہیں ، اس کے عین نیچے eWalletکے رجسٹریشن کی سہولت میسر ہوگی۔ جیسے ہی آپ اس پر کلک کریں گے آپ کے سامنے ایک نیا پیج کھل جائے گا ، جس میں آپ کے پین کارڈ کا نمبر اور کارڈ ہولڈر کا فرسٹ نیم پوچھا جائے گا۔ اسے بھرنے کے بعد پاس ورڈ کرئیٹ کرنے اور پھر رجسٹریشن چارج دینے کی سہولت ملے گی۔ رجسٹریشن چارج 250 روپے ہے۔ یہاں آپ کریڈٹ‘ ڈیبٹ کارڈ وغیرہ کے ذریعہ ادائیگی کر سکتے ہیں۔
کیا ہے trainenquiry.com؟
یہ نیشنل ٹرین انکوائری سسٹم ہے جہاں سے آپ چل رہی ٹرینوں کا اسٹیٹس حاصل کر سکتے ہیں۔
کیا ہے خاص؟
- سائٹ کھلتے ہی آپ کے سامنے spot your train, station, trains between stations, trains cancelled, rescheduled ، rescheduled اور diverted کی سہولتیں میسر ہوں گی۔ انہیں کلک کرکے حسب منشا معلومات لے سکتے ہیں۔
کیا ہے spot your train؟
- ٹرین کی کرنٹ مقام جاننے کیلئے یہ بہترین سائٹ ہے۔
- اگر کسی کو ریسیو کرنے یا اسٹیشن پر ٹرین میں سوار کروانے جانا ہے تو اس سے معلومات حاصل کرکے آپ اپنا قیمتی وقت بچا سکتے ہیں۔
- اس کے علاوہ اس ویب سائٹ پرکینسل ، ری شیڈول اور جن ٹرینوں کا روٹ ڈائیورٹ ہوا ہے ، ان کی بھی معلومات حاصل کی جا سکتی ہے۔
کس طرح کریں استعمال؟
- اس پر کلک کریں گے تو آپ کے سامنے جو پیج کھل جائے گا ، اس میں Enter train name/no.ملے گا۔
- اس کے سامنے بنے ہوئے باکس میں ٹرین کا نام یا نمبر لکھیں۔ پھر Journey/Boarding/Arrival station میں جس اسٹیشن پر آپ ٹرین کی پوزیشن جاننا چاہتے ہیں ، اس اسٹیشن کا نام ٹائپ کریں۔
- پھر اگلے کالم Journey/Boarding/Arrival date میں تاریخ بھی ڈالیں۔ اس کے بعد آپ یہ جان سکیں گے کہ آپ نے جس اسٹیشن کی بابت معلومات طلب کی ہیں ، وہاں ٹرین متعینہ وقت آ رہی ہے یا موخرہے۔ یہاں اسٹیشن پہنچنے میں لگنے والے متوقع وقت کا بھی پتہ چل سکتا ہے۔
- جو نیا پیج کھل جائے گا ، اس میں رائٹ سائیڈ میں نیچے کی طرف view full runningکی سہولت ملے گی۔ یہاں سے آپ ٹرین نے جتنی دور کا سفر کیا ہے ، وہاں کس اسٹیشن پر کتنی لیٹ پہنچی ، یہ بھی جان سکتے ہیں۔
- station پر کلک کرکے آپ کوئی بھی 2اسٹیشنوں کے درمیان چلنے والی ٹرینوں ، ان کی ٹائمنگ اور ان کی پوزیشن کی معلومات حاصل کر سکتے ہیں۔
- جیسے ہی نیا پیج کھل جائے گا ، اس میں Enter station to get trains میں آپ جہاں سے سفر کرنا چاہتے ہیں اس اسٹیشن کا نام ڈال دیجئے۔
- اگلے کالم Going to (Optional) میں چاہیں تو اسٹیشن کا نام لکھیں یا نہ لکھیں۔ آپ کو یہاںسے 2 سے 8 گھنٹے کے درمیان چھوٹنے یا گزرنے والی تمام ٹرینوں کا پتہ چل جائے گا۔
- train between stations پر کلک کرکے آپ کوئی بھی2 اسٹیشنوں کے درمیان چلنے والی ہر ٹرین کی معلومات حاصل کر سکتے ہیں۔ یہاں from اور to کے آگے میسر باکس بھرنے کے بعد go پر کلک کر دیں۔ پل بھر میں آپ کے سوال کا جواب مل جائے گا۔
کیا ہے indiarailinfo.com ؟
یہ اگرچہ ہندوستانی ریلوے کی آفیشل ویب سائٹ نہیں ہے ، لیکن اس پر بہت سی مفید معلومات میسر ہیں۔ مثلا ، یہاں یہ کیا جا سکتا ہے کہ ایک اسٹیشن سے دوسرے اسٹیشن تک پیسیجر اور ایکسپریس ٹرینوں ویا کدھر سے جاتی ہیں اور ان کا کرایہ کیا ہے۔
کیا ہے facebook کا استعمال؟
فیس بک پر Delhi Division Northern Railwayکا صفحہ موجود ہے۔
 About پر جا کر جب http://122.252.248.147:8084/MultiStnTAD/ پر کلک کریں گے تو آپ نئی دہلی ، پرانی دلی اور حضرت نظام الدین اسٹیشنوں پر ٹرینوں کے ارایول‘ ڈیپارچر کی معلومات کیساتھ ہی یہ بھی جان سکتے ہیں کہ ٹرین کس پلیٹ فارم پر آئے گی یا روانہ ہوگی۔
اس کے نیچے ایک اور لنک http://122.252.248.145:8182/RW میسرہے۔
اس پر کلک کرکے دہلی کے5ا سٹیشنوں نئی دہلی ، پرانی دلی ، حضرت نظام الدین ، سرائے روہیلا اور آنند وہار سے روانہ ہونے والی کسی بھی ٹرین میں چارٹ تیار ہونے کے بعد کتنی سیٹیں باقی ہیں ، اس کی معلومات حاصل کی جا سکتی ہیں۔
چلتی ہوئی ٹرین میں کھانا میسر:
وہ دن لد گئے جب سفر کا پلان بنتے ہی ٹرین میں کھانے کیلئے کیا کیا لے جائیں ، اس موضوع پر غوروفکر اور تیاری ہونے لگتی تھی۔ اب لوگ اسٹیشنوں سے کھانا پیک کروا کے یا پینٹری کار میں میسر کھانے کے سہارے سفر کرنے لگے ہیں۔ اگرچہ پیٹ پینٹری کارمیں من پسند کھانا نہ ملنے اور دیگرتمام وجوہات پر مشتمل نیا نظریہ بھی فروغ پارہا ہے۔ یہ ہے چل رہا ٹرین میں آرڈر پر کھانا پہنچانے کا۔
کہاں سے آئے گا کھانا؟
Comesumکے ٹول فری نمبر 1800-103-4141 یا 011-41100100 پر فون کر کے آپ اپنے لیے کھانا منگوا سکتے ہیں۔ ٹرین روٹ میں جس اسٹیشن پر دکان ہوگی ، وہاں کھانے کی ڈلیوری کر دی جائے گی۔ ان نمبروں پر آپ کبھی بھی فون کر سکتے ہیں ، لیکن کوشش کریں کہ کھانے کا آرڈر ایک گھنٹے پہلے دے دیں۔ کھانے کا آن لائن آرڈر www.comesum.com پر بھی دے سکتے ہیں۔ حالانکہ اس کے بعد آپ کے موبائل پرکنفرمیشن کال کرنے کے بعد ہی کھانے کی ڈلیوری ہوتی ہے۔
کیا ہے travelkhana.com ؟
یہاں سے کھانا بک کرانے کیلئے 08800-31-31-31 پر صبح 7 سے رات 10 بجے کے درمیان فون کرنا ہوگا۔ یہاں بھی کمسم Comesum کی طرح آن لائن کھانا بک کروا سکتے ہیں جس کا میسیج بھی سائٹ پر درج کئے ہوئے موبائل نمبر پر ہی آئے گا۔
ٹکٹ رقوم کی واپسی کے قوانین:
بعض مرتبہ کسی وجہ سے سفر ملتوی کرنا یا منسوخ کرنا پڑتا ہے ایسی صورت میں رقوم کی واپسی کے قواعد جاننا بہت ضروری ہیں۔ ڈالتے ہیں ان پر ایک نظر
کنفرم ٹکٹ:
ڈیپارچر وقت سے 48 گھنٹے پہلے
اے سی فرسٹ اور ایگزیکٹوکلاس 120 روپے
اے سی سیکنڈ اور فرسٹ کلاس 100 روپے
تھرڈ اے سی اور اکنامی اورچیرکار 90 روپے
سلیپر 60 روپے
سیکنڈ سیٹگ 30 روپے
 ریلوے یہ چارج فی پسنجرکاٹے گا
ڈیپارچر وقت سے 48 سے 6 گھنٹے پہلے: 25 فیصد رقم کٹ جائے گی
ڈپارچر وقت سے 6 گھنٹے پہلے سے لے کر 2 گھنٹے بعد تک: 50 فیصد رقم کٹے گی
ڈپارچر وقت کے 2 گھنٹے بعد: کوئی رقم   کی واپسی نہیں ہوگی ، اس سے قبل اگر رقوم کی واپسی چاہتے ہیں تو ٹی ڈی آر بھرنا پڑے گا۔
ویٹنگ اور آراے سی ٹکٹ:
ویٹنگ اور آراے سی ٹکٹوں کو رقوم کی واپسی کرنے پر صرف کل کریج چارجز کٹتے ہیں۔ آراے سی اور ویٹنگ کے ٹکٹ پر غیر اے سی میں 30 روپے فی پسنجر اور اے سی میں 35 روپے فی پسنجر کٹتے ہیں۔ اگر ای ٹکٹ ہے تو ویٹنگ خود بخودکینسل ہو جاتی ہے۔ آراے سی ہونے پر ٹرین ڈیپارچر وقت کے 3 گھنٹے بعد تک ٹی ڈی آر یعنی ٹکٹ ڈیپازٹ ریسیپٹ فائل کی جا سکتی ہے۔
کیا ہے TDR؟
ٹرین چھوٹ جانے پر آپ ٹکٹ کو ایک فارم بھر کر ‘آن لائن اور آف لائن‘ اسٹیشن پر جمع کر سکتے ہیں۔ ریلوے ضوابط کے مطابق 60 دن میں رقوم کی واپسی کی جائے گی۔
ریزرویشن کے لحاظ سے ان کا ہے انداز الگ:
عموما ٹرینوں میں ریزرویشن 60 دن پہلے کیا جا سکتا ہے لیکن کچھ خاص ٹرینیں ہیں ، جن کے ریزرویشن قوانین مختلف ہیں۔ ناردن ریلوے کی ان چند ٹرینوں میں ریزرویشن محض 30 دن قبل ہی ہوتا ہے۔
12419 / 12420 گومتی ایکسپریس
12279 / 12280 تاج ایکسپریس
14095 / 14096 ہماچل کوئن ملکہ ایکسپریس
12497 / 12498 شان پنجاب ایکسپریس
14721 / 14722 نئی دہلی‘ شری گنگانگر انٹرسٹی ایکسپریس
14731 / 14732 نئی دہلی‘ بٹھنڈا ایکسپریس
14211 / 14212 آگرہ انٹرسٹی ایکسپریس
12459 / 12460 امرتسر انٹرسٹی ایکسپریس
14681 / 14682 نئی دہلی ‘جالندھر ایکسپریس
14043 / 14044 دہلی ‘کوٹ دوار گڑھوال ایکسپریس
14209 / 14210 لکھنو ¿‘ الہ آباد انٹرسٹی ایکسپریس
14215 / 14216 گنگا ‘ گومتی لکھنو ¿ ‘ الہ آباد ایکسپریس
14203 / 14204 وارانسی‘ لکھنو ¿ انٹرسٹی ایکسپریس
14315 / 14316 بریلی‘ نئی دہلی انٹرسٹی ایکسپریس
14519 / 14520 دہلی ‘ بٹھنڈا کسان ایکسپریس
14525 / 14526 انبالہ‘ شری گنگانگر انٹرسٹی ایکسپریس
14711 / 14712 ہردوار‘شری گنگا نگر ایکسپریس
اس کے علاوہ ٹرین نمبر 4001/4002 دلی‘ اٹاری لنک ایکسپریس میں ریزرویشن محض 15 دن پہلے ہی کیا جا سکتا ہے۔
JTBS کی سہولت:
 ٹکٹ کاو ¿نٹر سے بھیڑ کم کرنے کیلئے’ جن سادھارن ٹکٹ بکنگ سیوک ‘Jan Sadharan Ticket Booking Sewakکنسپٹ عرف جے ٹی بی ایسJTBS بنایا گیا ہے۔ یہاں سے آپ پلیٹ فارم ٹکٹ ، غیر ریزرو ٹرین ٹکٹ لے سکتے ہیں۔ ساتھ ہی ایم ایس ٹی بھی رینیوRenew کرvا سکتے ہیں۔ اس کیلئے آپ کو فی مسافر 1 روپے کا اضافی خرچ ادا کرنا پڑتا ہے۔ ناردن ریلوے نے 55 اسٹیشنوں کیلئے ایسے 152 مرکز کھولے ہیں۔ دہلی میںبعض JTBS اسٹیشن کے قریب نہیں ہیں بلکہ دوسرے علاقوں میں بھی ہیں۔
کنفرم ٹکٹ کی منتقلی:
عام طور پر سیٹ یا برتھ جس شخص کے نام پر ریزرو ہو ، وہیں شخص اس ٹکٹ پرسفر کر سکتا ہے۔ ناردن ریلوے حکام کے مطابق اہم سٹیشنوں پر چیف کمرشل منیجر ( ریزرویشن ) ، اسسٹنٹ کمرشل منیجر ( ریزرویشن ) اور چیف ریزرویشن سپروائزر کوعرضی دے کر کسی دوسرے شخص کے نام سے نیا ٹکٹ جاری کیا جا سکتا ہے۔
کن حالات میں ہوگا ٹکٹ منتقلی؟
- اگر کوئی سرکاری ملازم آن ڈیوٹی ہو اور اس کا افسر گاڑی کے ڈیپارچر سے 24 گھنٹے قبل اس بارے میں تحریری درخواست پیش کرے۔
- کوئی مسافر اپنا ٹکٹ خاندان کے ارکان یعنی اپنے والدین ، بھائی ، بہن ، بیٹا ، شوہر یا بیوی کے نام پر منتقلی کروانا چاہے۔
- اگر کسی تسلیم شدہ تعلیمی ادارے کے اسٹوڈنٹ ٹرین سے سفر کرنے والے ہوں اور وہاں کا چیف ڈپارچر وقت سے 48 گھنٹے قبل ریلوے کو مطلع کرے۔ ایسی صورت میں ریزرو سیٹ کسی دیگر اسٹوڈنٹ کے نام ٹرانسفر کر دیا جاتا ہے۔
- اگر بارات جانے والی ہو اور بارات کا اہم آدمی یعنی بکنگ کے فارم پر دستخط کرنے والاشخص 48 گھنٹے قبل درخواست پیش کرے تو برتھ یا سیٹ کسی دوسرے شخص کے نام الاٹ کی جا سکتی ہے۔
- یاد رکھیں کہ ایسی رکویسٹ صرف ایک بار ہی قبول کی جاتی ہے۔
مدد کی گھنٹی: ہیلپ لائن
1322
ناردن ریلوے کی یہ ہیلپ لائن گزشتہ ماہ ہی شروع کی گئی ہے۔ دہلی اور لکھنو سمیت 731 سٹیشنوں پر یہ سہولت میسر ہے۔ اگر کسی کیساتھ کوئی واردات جیسے چوری ، ظلم و ستم یا حادثہ پیش آئے تووہ اس نمبر پر مدد کیلئے فون کر سکتا ہے۔ یہ ہیلپ لائن 24 گھنٹے کام کرتی ہے۔
011-23340000
یہ آئی آرسی ٹی سی کا کسٹمر کیئر نمبر ہے۔ اگر آئی آرسی ٹی سی کی سروسز کے بارے میں کوئی معلومات مطلوب ہوں تو اس نمبر پر 24 گھنٹے کال کر سکتے ہیں۔ مثال کے طور پر اگر ٹکٹ رقوم کی واپسی کا اسٹیٹس جاننا ہے تو فون کرکے اینار نمبر بتانے پر اس کی معلومات بھی اس نمبر سے مل سکتی ہے۔
1800111321
ریلوے کیٹرنگ کے سلسلہ میں اگر کسی طرح کی شکایت اس ٹول فری نمبر پر کی جا سکتی ہے۔
 اس نمبر پر پورے ملک سے کھانے میں کسی بھی کمی کے ملتے شکایت کی جا سکتی ہے۔ یہ سروس صبح 7 بجے سے رات 10 بجے تک کام کرتی ہے۔
9717630982
ریلوے کی کسی بھی سروس میں خرابی کی شکایت ناردن ریلوے کے اس نمبر پر ایس ایم ایس کے ذریعہ کی جا سکتی ہے تاہم خیال رکھنا ہوگا کہ ایس ایم ایس 140 کریکٹر سے زیادہ ہو ‘اس نمبر پر کال نہیں لگے گی۔
شناخت کے ثبوت میں 10 اہم دستاویزات:
ان 10 دستاویزات کو ریلوے فوری طور ٹکٹ ہونے پر شناخت ثابت کرنے کے لحاظ سے ویلڈیا قابل قبول تسلیم کرتا ہے:
1 - ووٹر کارڈ
2 - پاسپورٹ
3 - پین کارڈ
4 - ڈرائیونگ لائسنس
5 - سرکاری دفتروں کے شناختی کارڈ
6 - تسلیم شدہ اسکول‘ کالجوں کے اسٹوڈنٹ کے آئی کارڈ
7 - نیشنلائزڈ بینک کی تصویر والی پاس بک
8 - تصویر والا کریڈٹ کارڈ
9 - آدھارکارڈ
10 - ضلع انتظامیہ ، میونسپل باڈی اور پنچایت کی طرف سے جاری تصویر شناختی کارڈ جس میں سیریل نمبر تحریرہو
اگر آپ سلیپر یا سیکنڈ سٹنگ کلاس میں سفر کر رہے ہیں تو تصویر والا راشن کارڈ اور پاس بک کی مصدقہ یااٹسٹیڈ کاپی بھی قابل قبول ہوں گی۔
مفیداور کارآمد ایپس
ixigo indian rail & trains irctc
اس سے آپ کو دو سٹیشنوں کے درمیان کون کونسی ٹرینیں چلتی ہیں ، تلاش کر سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ ، جرنی ڈیٹ سے6 دن قبل اور 6 دن بعد تک ان سٹیشنوں کے درمیان کون کونسی ٹرینیں ہیں ، اسے بھی چیک کر سکتے ہیں۔اس کیساتھ ہی ٹرینوں کے نام اور نمبر ، چل رہی اسٹیٹس ، پی این آر اسٹیٹس جاننے کیساتھ بھی برتھ لوکیشن بھی دیکھ سکتے ہیں۔ اگر فرض کریں کہ آپ نے ایسی سیکنڈ میں 24 نمبر کا برتھ بک کروایا ہے تو ڈبہ میں یہ سیٹ کس لوکیشن پر ہوگی ، اسے بھی چیک کر سکتے ہیں۔اس کیساتھ ہی ، یہیں سے irctc.co.inسے بھی رابطہ قائم کر سکتے ہیں۔
جس کسی کے پاس اینڈرائڈ فون ہے ، وہ گوگل پلے سے اس ایپ کو فری ڈاو ¿ن لوڈ کر سکتے ہیں۔
Rail Yatri
اسے بھی گوگل پلے سے اینڈرائڈ فون پر اور ونڈوز پر بھی فری ڈاو ¿ن لوڈ کیا جا سکتا ہے۔ اس میں آپ کے قریبی ا سٹیشنوں سے چلنے یا گزرنے والی نئی ٹرینوں کی معلومات ، ٹرینوں کے روٹ میں تبدیلی ، ٹرین رننگ اسٹیٹس کے علاوہ پی این آر اسٹیٹس ، ٹائم ٹیبل وغیرہ کی معلومات حاصل کی جاسکتی ہیں۔ اس ایپ کا دعوی ہے کہ اس کے ذریعہ ٹرین کی رفتار کی معلومات بھی حاصل کی جا سکتی ہیں۔
Cleartrip
جو لوگ موبائل سے ٹرین ٹکٹ بک کروانا چاہتے ہیں ، یہ یپ ان کیلئے معاون و مددگار ہے۔ اسے گوگل پلے سے اینڈرائڈ اور آئی اوایس ، ونڈوز اور بلیک بیری پر فری ڈالوڈ کیا جا سکتا ہے۔ آپ اپنے آئی آرسی ٹی سی اکاو ¿نٹ کو اس میں محفوظ کر سکتے ہیں۔ فوری طور پر ٹکٹوں کی بکنگ سے دو گھنٹے قبل یعنی صبح 10 سے 12 بجے کے علاوہ ، باقی ا وقات میں اس کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ ٹرینوںسے متعلق معلومات ، سیٹوں کی دستیابی ، شیڈول ، ٹائم ٹیبل ، کرایہ ، پی این آر اسٹیٹس اور کسی بھی ٹرین کی دو سٹیشنوں کے درمیان ارائیول اور ڈیپارچر کا کیا شیڈول ہے ، اس کی بھی معلومات فراہم کرتا ہے۔
IRCTC App
یہ آئی آرسی ٹی سی کا آفیشل ایپ ہے۔ یہاں آپ ٹرین ریزرویشن سے لے کر پی این آر اسٹیٹس تک کی معلومات حاصل کرسکتے ہیں۔ اگرچہ آئی آرسی ٹی سی نے اس کو ابھی ونڈوز پر ہی پیش کیاہے جسے فری ڈاو ¿ن لوڈ کیا جا سکتا ہے۔......ایس اے ساگر

Last modified on سه شنبه, 06 خرداد 1393 13:13
Login to post comments