×

هشدار

JUser: :_بارگذاری :نمی توان کاربر را با این شناسه بارگذاری کرد: 830

بہترین عبادت کون سی ہے ؟

تیر 20, 1393 508

بہترین عبادت وہ عبادت ہے جو خالصتا اللہ تعالی کی رضا کے لئے کی جائے اور اس عبادت میں خدا کی ذات کے سواء کوئی بھی چیز شامل نہ ہو ۔

حضرت علامہ طباطبائی فرماتے ہیں کہ
" عبادت اس وقت حقیقی عبادت ہوتی ہے جب عبادت کرنے والے کی عبادت میں خلوص ہو "
عبادت اس وقت مکمل ہوتی ہے جب انسان اللہ کے سواء کسی بھی دوسری چیز میں مشغول نہ ہو اور عبادت کے دوران انسان کو صرف خدا کی ذات میں مگن ہونا چاہئے ۔ عبادت گزار کے لئے ضروری ہے کہ اپنے عمل میں خدا تعالی کا کوئی شریک تلاش نہ کرے اور عبادت کے دوران اس کا دل خدا کی ذات کے سواء کسی بھی دوسری طرف متوجہ نہ ہو ۔ انسان کو خدا سے حقیقی محبت کرنی چاہئے اور اس محبت کا تقاضا یہ ہے کہ  اپنے محبوب یعنی خدا تعالی کی عبادت کرتے ہوئے اسے کسی چیز کی امید یا ڈر میں مبتلا نہیں ہونا چاہئے مثلا وہ اس امید سے عبادت نہ کرے کہ اسے جنت ملے گی یا اس ڈر سے عبادت نہ کرے کہ اسے جہنم کی آگ میں دھکیل دیا جائے گا ۔ کہنے کا مقصد یہ ہے کہ حقیقی عبادت وہ ہوتی ہے جو کسی امید اور ڈر سے پاک ہو اور خالص طور پر خدا کی محبت میں خدا کی رضا حاصل کرنے کے لئے کی جائے۔
عبادت کیا ہے ؟
 بعض لوگوں کے نزدیک عبادت نماز و ذکر اور دعائیں کرنے کا نام ہے اور بعض اپنے اشعار میں یوں کہتے ہیں کہ
" عبادت خلق خدا کی خدمت کرنے کے سواء کچھ بھی نہیں ہے "
ان دو خیالات اور نظریات میں افراط و تفریط پائی جاتی ہے اور ایسا تقریبا ہر جگہ اکثر ہوتا ہے ۔ کوئی امام کی تعریف کرتے ہوئے اس کی شناخت کو بڑھا چڑھا کر بیان کرتا ہے اور کوئی امام کو ایک عام فرد تصور کرتا ہے ۔ سادہ الفاظ میں ہم یہ کہہ سکتے ہیں کہ ہر وہ کام جس میں خدا کا رنگ نظر آئے اور وہ کام خدا کی رضا کے لئے ہو وہ عبادت کے زمرے میں آتا ہے ۔ خواہ وہ مزدور کا روز مرہ کا کام ہی کیوں نہ ہو ۔ اگر مزدور بھی اپنے کام کو خالص دل سے خدا کی رضا کے لئےاور پوری جانفشانی اور نیک نیتی سے انجام دے تو وہ بھی اس کی عبادت ہو گی ۔

Login to post comments