Print this page

آخری نجات دہندہ تورات کی نگاہ میں

مرداد 14, 1393 567
Rate this item
(0 votes)

مہدویت دین یہود میں؛ مہدی(عج) و عیسی(ع): یہودیوں کا عقیدہ ہے کہ آخر الزمان میں "ماشیح" نامی ایک نجات دہندہ ظہور کرے گا اور وہ

حضرت داؤد (علی نبینا و آلہ و علیہ السلام) کی نسل سے ہوگا۔
یہ بھی قابل ذکر ہے کہ مسلمانوں کے موعود حضرت مہدی (علیہ‌السلام) کی والدہ ماجدہ کا سلسلہ نسب حضرت داؤد (علی نبینا و آلہ و علیہ السلام) سے جاملتا ہے!
پیدائش کے سفر میں ہے کہ:
"تمہارا نام ابراہیم ہوگا۔۔۔ میں نے اسماعیل کے بارے میں تمہاری التجا قبول فرمائی اور میں اس کو برکت دے کر بارور کردوں گا اور اس (کی نسل) کو کثرت عطا کروں گا اس سے بارہ رئیس نمودار ہونگے اور میں اس سے ایک عظیم امت خلق کروں گا۔۔۔ ابراہیم سے ایک عظیم اور طاقتور امت پیدا ہوگی اور دنیا کی تمام امتیں اس سے برکت پائیں گی"۔  
واضح رہے کہ حضرت اسماعیل (ع) سے صرف ایک نبی یعنی پیغمبر اکرم (ص) کا وجود مقدس رتبہ رسالت پر فائز ہوا ہے جو البتہ سید الانبیاء ہیں؛ اور آنحضرت (ص) کے تمام جانشین بھی حضرت اسماعیل (ع) کی نسل سے ہیں۔
* ایک شاخ اپنی جڑوں سے نکل کر نشو و نما پائے گی اور "ایک نہال " یسی کے تنّے" سے نکل آئے گا اور خدا کی روح اس کے اوپر قرار پائے گی ۔۔۔ وہ مسکینوں کے بارے میں عدل و انصاف سے فیصلے کرے گا اور مظلوموں کی خاطر زمین پر صداقت کے ساتھ حکم روائی کرے گا ۔۔۔ بھیڑیا بَرّے کے ساتھ سکونت اختیار کرے گا اور چیتا بکری کے ہمراہ آرام کرے گا اور بچھڑا موٹے شیر کے ہمراہ ہوگا جب کہ ایک چھوٹا طفل انہیں ہانک دے گا۔۔۔ اور میرے پورے مقدس پہاڑ میں جھگڑا اور فساد نہیں کرے گا کیوں کہ دنیا معرفت الہی سے مملو ہوگی سمندر کو چھپانے والے پانیوں کی مانند۔"
"یسی" (بعض نسخوں کے مطابق "یشی") "قوی" (طاقتور) کے معنی میں آیا ہے اور یہ حضرت داؤد (ع) کے والد کا نام ہے اور جیسا کہ ذکر ہوا ہمارے موعود حضرت مہدی (عج) والدہ کی جانب سے ان سے جاملتے ہیں۔
* "… اور زمین کی مٹی میں سوئے ہووں میں سے بہت سے لوگ جاگ اٹھیں گے ۔۔۔ اور وہ – جو بہت سوں کے عدل و انصاف کے ساتھ راہنمائی کریں گے – ستاروں کی مانند ہوں گے ابدالآباد تک۔  اور تو اے دانیال! کلام کو خفیہ رکھ اور کتاب کو اس وقت تک مہر لگا دے۔۔۔۔ آفرین ہے ان لوگوں پر جو انتظار کرتے ہیں‌۔ "
* "اگرچہ وہ تأخیر ہی کیوں نہ کرے، اس کا انتظار کرتے رہنا کیونکہ وہ قطعی طور پر آئے گا اور رکے گا نہیں۔۔۔ بلكہ وہ تو تمام امتوں کو اپنے پاس اکٹھا کرے گا اور تمام اقوام کو اپنے لئے فراہم کرے گا۔"
* "… اور آخری ایام میں واقع ہوگا … تمام امتیں اس کی سمت روانہ ہونگی … وہ امتوں کے درمیان فیصلے اور قضاوت کرے گا … کوئی امت کسی امت کے خلاف تلوار نہیں اٹھائے گی اور اب کی بار کوئی جنگ کی آگ نہ بھڑکائے گا۔ "
* "… اور پھر انصاف صحرا میں سکونت پذیر ہوگا اور عدل بوستانوں میں قیام کرےگا اور عدل کا عمل اور سلامتی اور عدل کا نتیجہ، ابدالآباد سکون و اطمینان ہوگا اور میری قوم سلامتی کے مسکن میں اور اطمینان بخش گھروں میں اور پرسکون منازل میں سکونت پذیر ہوگی"۔
مزید وضاحت کے لئے "عہد عتیق" کتاب "اشعیائے نبی" (فصل 1 و 45)، زکریائے نبی (فصل 14)، صفنیائے نبی (فصل 3)، حجی نبی (فصل 2)، سیموئیل نبی (فصل 2)، و سیموئیل نبی (فصل 12 و 23) اور حزقیل نبی (فصل 21) سے رجوع کریں۔(ختم شد)
ترجمہ : فرحت حسین مہدوی

Login to post comments